خبر
1/2/2020
الحشدالشعبی کے اڈوں پر امریکی دہشت گردی ملت عراق سے انتقامی کارروائي ہے: متولی  آستان قدس

 
الحشدالشعبی کے اڈوں پر امریکی دہشت گردی ملت عراق سے انتقامی کارروائي ہے: متولی آستان قدس

آستان قدس رضوی کے متولی نے دہشت گروہ داعش کے خلاف جنگ میں عراق کی عوام رضاکارفورس الحشد الشعبی کی فداکاریوں اور دہشت گردوں کو شکست دینے میں اس فورس کے کردار کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ الحشد الشعبی کے اڈوں پر امریکا کا دہشت گردانہ حملہ دہشت گردی کے خلاف عراقی عوام کی فتح کا بدلہ لینے کے لئے تھا    

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛ حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی نے  حرم مطہر رضوی کے ولایت ہال میں شام کے بعض قبیلوں کے سرداروں کے ایک وفد سے ملاقات میں عقیلہ بنی ہاشم حضرت زینب کبریٰ سلام اللہ علیہا کی ولادت با سعادت کی مناسبت سے مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ شام نے حالیہ برسوں کے دوران  امریکا ، اسرائیل اور بعض عرب حکومتوں کے فتنوں کا  ڈٹ کر مقابلہ کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ امریکا اور صیہونی حکومت عالم اسلام اور  امت محمد(ص) کے ازلی دشمن ہیں اور ان دونوں سے دشمنی کے علاوہ کسی اور چیز کی امید نہیں رکھی جا سکتی لیکن جو بات باعث افسوس ہے وہ یہ کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات جیسے بعض اسلامی ممالک  ان اسلام دشمن قوتوں کے ساتھ  ہیں۔ انہوں نے کہا  کہ  ان مسلم ممالک کو  جو خداد داد قدرتی ذخائرو وسائل نصیب ہیں انہیں امت اسلامیہ کی ترقی و پیشرفت  میں صرف ہونا چاہئے تھا لیکن بدقسمتی سے یہ ذخائر اور وسائل دشمنان دین کے سپرد کردئےجاتے ہيں اور وہ ان کے ذریعے مسلمانوں پر ضرب لگاتے ہیں۔  

حجت السلام والمسلمین مروی نے اس بات پر  زور دیتے ہوئے کہ ہمیں تلخ حادثات اور واقعات سے مستقبل کے لئے سبق لینا چاہئے ، امت مسلمہ کے خلاف داعش کو  تشکیل دینے کی امریکا اسرائیل اور بعض عرب حکومتوں کی سازشوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ سب سے پہلے تو ہمیں اس بات کا یقین کرلینا چاہئے کہ امریکا، صیہونی حکومت اور علاقے کی بعض رجعت پسند حکومتیں اسلام اور مسلمانوں کی دشمن ہیں اور پھر یہ بھی سمجھ لینا چاہئے کہ عراق اور شام کے واقعات میں یہ ثابت ہوگیا کہ اب امریکا وہ سپر طاقت ہے نہیں رہ گیا کہ جو چاہے وہ کرسکتا ہے اور جو اس کی مرضی ہوگي وہسا ہی ہوگا    
آستان قدس رضوی کے متولی نے  کہا کہ امریکہ اور صیہونی حکومت نے اپنی پوری طاقت اور علاقے کی رجعت پسند عرب حکومتوں نے اپنے پیٹرو ڈالرسب کچھ داؤں پر لگادیا تاکہ دہشت گرد گروہوں کے ذریعے شام پرجنگ مسلط کرکے اس کو نابود کردیں  لیکن وہ اپنے مقصد میں کامیاب نہیں ہو سکیں۔ 

انہوں نے کہا کہ شام  کے بڑے شہروں میں ہزاروں افراد کا قتل عام اور لاکھوں انسانوں کو بغیر کسی جرم کے بے گھرکر دیا گیا لیکن امریکہ پھر بھی اپنے ناپاک مقاصد میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ 

حجت الاسلام مروی نے داعش کے فتنے سے حاصل ہونے والا تیسرا سبق قوم کی طاقت  اور قومی اتحاد کی اہمیت کو قراردیا اور کہا کہ شام کے بحران سے جو ایک اور سبق حاصل کیا جاسکتا ہے وہ یہ ہے کہ اگر ایک پوری قوم مذہب و مسلک سے بالاتر ہوکر اٹھ کھڑی ہو تو دشمن جتنا بھی طاقتور ہوگا وہ اس قوم کو شکست نہیں دے سکے گا  ۔ 

حجت الاسلام مروی نے کہا کہ ہم نے شام  کے اندر نصرت الہی کا قریب سے مشاہدہ کیا ہے  البتہ اس  جنگ میں شام کے عوام فوج اور حکومت کی استقامت و بہادری کے ساتھ ساتھ  حزب اللہ کے مؤثر کردار سے بھی انکار نہیں کیا جا سکتا ۔ 

حجت الاسلام مروی کا کہنا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کا اصول، مسلمانوں کی حمایت کرنا ہے خواہ وہ کسی بھی مسلک سے ہوں اور  حضرت امام خمینی(رح) نے انقلاب کے شروع میں ہی فلسطین کے مسئلہ کو اسلامی جمہوریہ ایران کے اہم منشورمیں سے قرار دیا تھا اگرچہ ممکن ہے کہ فلسطین میں ایک بھی شیعہ موجود نہ ہواور اسی بات سے آپ اندازہ لگا سکتے ہیں کہ اسلام اور مسلمانوں کے مسائل ہمارے لئے کتنے اہم ہیں۔ 

آستان قدس رضوی کے متولی نے  عراق کے اندر الحشد الشعبی کے اڈوں پر امریکا کے حالیہ دہشت گردانہ حملوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں دشمن کو پہچاننا ہوگا اور ایک لمحہ کے لئے بھی دشمن سے غافل نہیں رہنا ہوگا ۔ انہوں نے کہا وہ عوامی تحریک جس نے داعش جیسے دہشت گرد گروہ کے خلاف جنگ کی امریکہ نے اسی پر حملہ کر کے دسیوں عراقی جوانوں کو  شہید اور زخمی کردیا  

 آستان قدس رضوی کے متولی نے کہا کہ الحشد الشعبی کے خلاف دہشت گردی  سے امریکا کا حقیقی چہرہ سب پر عیاں ہوچکا ہے ۔ خداوند متعال قرآن کریم میں ارشاد فرماتا ہے : «إِنَّ الشَّيْطانَ لَكُمْ عَدُوٌّ فَاتَّخِذُوهُ عَدُوًّا، بیشک شیطان تمہارا دشمن ہے پس تم بھی اسے اپنا دشمن سمجھو‘‘کیا آج امریکہ اسلام اور مسلمانوں کا دشمن نہیں ہے؟ کیا دشمن کے بارے میں حسن ظنّ  رکھ سکتے ہیں؟

حجت الاسلام مروی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف دشمن کی پابندیوں کے باوجود ہم خداوند متعال پر توکل کرتے ہوئے دفاعی ، سائنسی، طبی اور ٹیکنالوجی جیسے بہت سے میدانوں میں  اپنے پیروں پر کھڑے ہوگئےہیں 

انہوں نے کہا کہ جیسا رہبرانقلاب اسلامی نے فرمایا ہے  ہم شام کے معاملے کو اپنا معاملہ سمجھتے ہیں اور حقیقت میں جس شخصیت نے شام کے مسئلہ پر استقامت پر تاکید فرمائی اور بہت سارے لوگوں کی مایوس کن باتوں کے باوجود ہمت و حوصلہ دیا اورپورے یقین سے  فرمایا کہ ’’ امریکہ شکست کھائے گا‘‘ وہ رہبر  انقلاب اسلامی تھے اور جو آپ نے فرمایا تھا وہی ہوا۔
   
وزٹرز کی تعداد:64
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...