خبر
12/8/2019
معرفتی اور قومی اہداف کی تکمیل کے لئے زیارت کی غیرمعمولی برکتوں سے استفادہ پر تاکید

 
معرفتی اور قومی اہداف کی تکمیل کے لئے زیارت کی غیرمعمولی برکتوں سے استفادہ پر تاکید

آستان قدس رضوی کے  متولی نے قومی زیارتی ورکنگ گروپ کے عہدیداروں اور ممبران سے ملاقات میں معرفتی اور قومی اہداف کی تکمیل کے لئے زیارت کی عظیم و غیرمعمولی برکتوں سے استفادہ  کی ضرورت پر تاکید کی ۔
آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق، آستان قدس رضوی کے متولی حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی نے قومی زیارتی ورکنگ گروپ کے  ممبران اور عہدیداروں سے ملاقات میں جس میں ایوان صدر کے دفتر کے انچارج  ، وزیر ثقافت و ارشاد اسلامی ، صوبہ خراسان رضوی، صوبہ قم اور صوبہ فارس کے گورنر، شہید فاؤنڈیشن کے سربراہ اور اسی طرح حضرت شاہ چراغ علیہ السلام کے روضہ مبارک کے متولی بھی شریک تھے اور جو حرم مطہررضوی کے ولایت ہال میں منعقد ہوئی، کہا کہ میرے نام  رہبرانقلاب اسلامی نے اپنے حکمنامے میں اس بات پر تاکید کی ہے کہ آستان قدس رضوی، حکومتی اداروں کے ساتھ تعاون کرے  اس لئے میں دیگر حکومتی اداروں کے ساتھ تعاون کو اپنا فرض سمجھتا ہوں 
انہوں نے حضرت امام علی رضا علیہ السلام کی کرامتوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: اگر کسی جگہ پر کچھ لوگوں کو جمع کرنا ہوتا ہے تو ہمیں مختلف طرح سے میڈیا اور دیگر وسائل کا سہارا لینا ہوتا ہے اس کے بعد لوگ کسی مقام پر لوگ جمع ہوتے ہیں لیکن یہ امام رضا علیہ السلام کا معجزہ ہے کہ لوگ اپنے ذاتی خرچ سے یہاں آتے ہیں اور زیارت کے لئے ہرطرح کی مشکلات برداشت کرتے ہیں؛ یعنی یہ ایک حقیقت ہے کہ  امام رضا علیہ السلام نے سب کو اپنی طرف متوجہ کررکھا ہے۔

 آستان قدس رضوی کے متولی نے کہا کہ مشہد مقدس میں سالانہ 3کروڑ زائرین خود اپنے شوق و ذوق سے حضرت امام علی رضا علیہ السلام کی زیارت کے لئے آتے ہیں ، اس سے بڑا معجزہ اور کرامت اور کیا ہوسکتی ہے؟

حجت اسلام والمسلمین مروی نے مزید کہا کہ چونکہ یہ حقیقت ہمارے لیے ایک عام بات بن چکی ہے لہذا ہم اس بات کو فراموش کرچکے ہيں زائرین کا یہ جم غفیر ایک بڑی کرامت ہے ۔ لیکن جو ہماری ثفافت سے بیگانہ  ہیں اور دور سے اس     طرح کے مناظر کو دیکھتے ہیں ان کے لیے یہ ایک بڑا معجزہ و کرامت ہے ۔ انہوں نے کہا  حضرت امام علی رضا علیہ السلام ہمارے حال پر حاضر و ناظر ہیں اس لئے ہمارے لئے ضروری ہے کہ ہم حضرت سے قلبی رابطہ برقرار کریں۔

انہوں نے اس سال کی گرمیوں میں آستان قدس رضوی میں نذر و ہدیوں میں گذشتہ برسوں کی بہ نسبت قابل ذکر اضافے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ اقتصادی مسائل ومشکلات کے باوجود اس سال گرمیوں میں گذشتہ برسوں کی بہ نسبت 30 فیصد زیادہ نذر و نیاز آئی ہے اور یہ حقیقت امام رضاعلیہ السلام سے  لوگوں کی محبت و عقیدت کو ثابت کرتی ہے 

آستان قدس رضوی کے متولی نے کہا کہ حرم مطہر رضوی میں کروڑوں زائرین کی حاضری اور موجودگي  سے بھرپوراستفادہ کیا جانا چآہئے انہوں نے کہا کہ جیسا کہ حضرت امام علی رضا علیہ السلام کی مدینہ منورہ سے ایران کی جانب ہجرت ایک تمدن آفرین ہجرت قرار پائی  اور حضرت کے وجود مقدس کی برکتیں ایران و پوری دنیا میں بے شمار فیوضات کا باعث بنیں اوران برکتوں کا سلسلہ آج تک جاری و ساری ہے اسی طرح ہمیں بھی امام رضا علیہ السلام کے کروڑوں زائرین کی حرم میں حاضری سے بھرپور استفادہ کرکے سیرت رضوی کو عام کرنا چاہئے تاکہ لوگوں کی معرفت میں اضافہ ہو اور ایک اسلامی و ایرانی معاشرے کو دنیا میں ایک نمونے کے طورپر متعارف کرانے اور اس عمل کی پیشرفت میں مدد ملے  ۔

حجت الاسلام مروی نے کہا کہ ہم سب کو چاہئے کہ اس روضہ منورہ کے وجود مقدس اورحضرت امام علی رضا علیہ السلام کے پرخیر و برکت وجود سے معنوی وسائل سے استفادہ کرتے ہوئے مختلف میدانوں منجملہ  معنویت، دینی معرفت، اسلامی طرز زندگی، امن و سلامتی ، معیشت و اقتصاد وغیرہ کے میدانوں میں ترقی کو یقینی بنائيں

   
وزٹرز کی تعداد:73
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...