خبر
6/24/2019
برطانیہ کے سنی و شیعہ علما کی آستان قدس کے نائب متولی سے ملاقات

 
برطانیہ کے سنی و شیعہ علما کی آستان قدس کے نائب متولی سے ملاقات

آستان  قدس رضوی  کے نائب متولی نے برطانیہ کے مسلم  علماء سے ملاقات کے دوران کہا کہ دشمن  معاشروں کو بیدار کرنے میں علما کے کردار سے خائف ہے

آستان قدس رضوی کے نائب متولی نے مغربی ممالک میں دشمن کی جانب سے علمائے اسلام کی سرگرمیوں پر دباؤ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس دباؤ اور حساسیت کی وجہ یہ ہے کہ دشمن خوفزدہ ہے کہ علمائے اسلام کی جانب سے اعلائے کلمۂ حق کا اثر کہیں عوام کے قلوب کو مسخر نہ کر لے اور ان کی بیداری کا باعث نہ بن جائے

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق، آستان قدس رضوی کے نائب متولی مصطفی خاکسار قہرودی نے برطانیہ کے شیعہ و سنی علماء سے آستان قدس رضوی کے مرکزی ادارے میں ملاقات کے دوران  کہا کہ مغربی ممالک میں شعائرالہی کی تعظیم کی ترویج میں مسلمان علما‏ء کا کردار بے حد اہم ہے۔ اس سلسلے میں انھوں نے مزید کہا کہ اگر مغربی ملکوں میں مقیم مسلمان آج پرامن زندگی گذار رہے ہیں تو یہ ان ملکوں میں مقیم مذہبی رہنماؤں اور علما کی کوششوں کی ہی مرہون منت ہے۔ ایسے مخلص علما جو خدمت خلق کی راہ میں علم ، عمل ، دعوت حق اور انسانوں کی تربیت کوایک دوسرے سے الگ نہيں سمجھتے  
 آستان قدس رضوی کے نائب متولی  نے مغربی ملکوں میں شعائرالہی کی تعظیم  اور دینی تعلیمات کی تبلیغ و نشرواشاعت نیز خالص دینی میعار پر انسانوں کی تربیت کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا : بلا شک مغربی ملکوں میں اسلام  صرف اور صرف سخت کوش اور شجاع علماء کی انتھک کوششوں، مجاہدانہ سرگرمیوں اور زحمتوں کی بنا پرزندہ و پایندہ ہے۔ 

آستان قدس رضوی کے نائب متولی نے مغربی ملکوں میں مسلمان علما کے سلسلے میں روا رکھی جانے والی عداوتوں اورخباثتوں کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ اس حساسیت اور دباؤ کی واحد وجہ، علمائے اسلام کی متاثرکن شخصیت ہے۔ عوام کے دلوں پر ان علماء کی تحریر و تقریر کے اثرونفوذ اور ان کی بیداری کا خوف ان دشمنوں کے دلوں پر طاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں، میں آپ کو قابل مبارکباد سمجھتا ہوں کہ آپ کو یہ توفیق حاصل ہوئی ہے کہ آپ اس عظیم مشن کے لئے چنے گئے ہیں جس میں آپ عوام کو بیدار کرنے اور ان کی ہدایت و رہنمائي کرنے میں پیش پیش ہیں۔ یہ یقینا" ایک عنایت الہی ہے جس کی  مبارکباد دینا  میں  ضروری سمجھتا ہوں۔

انھوں نے اس ملاقات میں موجود علماء کو خطاب کرتے ہوئے یہ بھی کہا: آپ لوگ ایسے مہاجرین ہیں جو دین کی تبلیغ اور عوام کو دینی تعلیم اور اسلامی عقائد اور ان کی اہمیت کو مستحکم کرنے کےسلسلے میں بے پناہ مشکلات اور زحمتوں کے متحمل ہوئے ہیں اور ایک طرح سے آپ لوگ مغرب میں اسلام کے ستونوں کے محافظ ہیں۔ 

خاکسار قہرودی  نے اپنی تقریر میں اس بات کا ذکرکرتے ہوئے کہ آستان  قدس رضوی،  پاکستانی اور افغانی زائرین کی خدمت پر خاص توجہ دیتا ہے پاکستانی زائرین کے لئے میرجاوہ بارڈر پر زائرسرائے امام رضا کی تعمیر اور حرم مطہر امام رضا (ع) میں پاکستانی اور افغانی  زائرین کو مختلف قسم کی ثقافتی  سہولیات فراہم کئے جانے کی جانب اشارہ کیا اور کہا کہ  ہمیں اس بات کا شرف حاصل ہے کہ پورے سال بہت بڑی تعداد میں پاکستانی اور افغانی زائرین کی کی میزبانی کرتے ہیں    اور ان بھائیوں کی یہاں آمد پر ہمیں بے حد خوشی حاصل ہوتی ہے۔

انھوں نے  کہا کہ خصوصی طور پر عظیم الشان اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد ، پاکستانی اور افغانی بھائیوں نے، اسلامی تہذیب و ثقافت اور تعلیمات کو پھیلانے   اور اسلامی استقامتی محاذ کی تقویت اور اس کو مقتدر بنانے میں بے مثال کردار ادا کیا ہے ۔

آستان قدس رضوی کے نائب متولی نے اس بات پر زور دیتے ہوئے  کہ اتحاد اسلامی اور اخوت دینی تمام مسلمانوں کا دینی فریضہ ہے کہا کہ  افغانی اور پاکستانی زائرین ہمارے دینی بھائی اور ہمارے ہمسایے ہیں اور ہمیں اس بات کا یقین ہے کہ عظیم اور جدید اسلامی تمدن کو حقیقی شکل دینے میں یہ اپنا کردار پوری طرح ادا کریں گے۔ 

اس ملاقات کی ابتدا میں برطانیہ سے آئے ہوئے بعض علماء نے اپنے تاثرات بیان کرتے ہوئے امام رضا (ع) کی بارگاہ منور میں حاضری اور شرفیابی  کی توفیق پر بے انتہا مسرت کا اظہار کیا اوربرطانیہ کے اسلامی مراکز اور مجموعی طور پر مسلمانوں کی دینی اور مذہبی سرگرمیوں کے بارے میں تفصیل سے ذکر کیا۔       
 


   
وزٹرز کی تعداد:37
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...