خبر
5/19/2019
 رضوی ایس سی ایم کمپنی کے ذریعے مختلف قسم کی مچھلیوں اور جھینگوں کی برآمدات

 
رضوی ایس سی ایم کمپنی کے ذریعے مختلف قسم کی مچھلیوں اور جھینگوں کی برآمدات

رضوی سپلائی چین مینجمنٹ کمپنی کے سربراہ "علی رضا پیمان پاک" نے کہا ہے کہ رواں سال  ہماری کمپنی کا ایک ہدف مچھلیوں اور جھینگوں کی برآمدات بھی ہے    انہوں نے آستان نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس ہدف کے حصول کے لئے  ہم یہ منصوبہ بندی کررہے ہیں کہ مختلف قسم کی سمندری مچھلیوں کے قتلے نیز صاف کئے ہوئے جھینگوں کی صفائی اور پیکنگ کے بعد اس پروڈکٹ کو برآمد کیا جائے اور اسی کمپنی کے ایک اور شعبے میں ٹیونا مچھلیوں کی پرورش کرکے انھیں برآمد کیا جائے۔

رضوی ایس سی ایم کمپنی کے سربراہ نے یہ واضح کیا کہ چونکہ اس سال شکار کی گئی مچھلیوں کا حجم پچھلے سال کے مقابلے میں دس گنا زیادہ ہو گیا ہے ، اس لئے ہم نے بھی اپنے اس سال کی منصوبہ بندی میں اسی کے مطابق ترمیم کا ارادہ کیا ہوا ہے۔ موجودہ حالات میں مچھلیوں کے صاف کئے ہوئے ایک کیلو قتلے 14 ڈالر تک عمان اور خلیج فارس کے دیگرملکوں میں اور جھینگے 20 ڈالر تک روس میں بیچے جارہے ہیں۔ 

پیمان پاک کا کہنا تھاکہ  ایران کے عوام کے دسترخوان کے کھانوں کے آئٹم میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔ اس سلسلے میں انھوں نے اپنی اس منصوبہ بندی کا ذکر کیا کہ ٹیونا مچھلی کی مختلف قسموں کے شکار اور ان کے قتلوں وغیرہ کے پورے ملک میں مصرف کو بڑھانا بے حد اہم اقدام ہوگا۔ اس اقدام سے پورے ملک میں ایک زنجیر کی مانند مختلف قسم کے روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے خصوصا" صوبہ سیستان وبلوچستان کے جنوبی علاقوں اور چا بہار میں۔ اس سلسلے میں خوش قسمتی سے ہماری اس کمپنی کی کارکردگی بہت آچھی رہی ہے۔

انھوں نے مزید بتایا کہ رضوی سپلائي چین کمپنی نے سمندری مچھلیوں کے شکار، ان کی صفائی  اور پیکنگ وغیرہ کے اس عمل کے سلسلے میں چا بہار اور مکران کے ساحلی علاقوں میں کچھ ایسے کارخانوں کا پتہ چلایا ہے جو بند پڑے تھے اور ایسے قدم اٹھائے ہیں کہ اسی سال کے دوران انھیں دوبارہ فعال کردیا جائے۔  

رضوی سپلائي چین کمپنی کے سربراہ نے یہ بھی بتایا کہ ٹیونا مچھلی کھلے سمندر کی مچھلی ہے جو بحر عمان سے افریقہ کے ساحلوں تک فراوانی کے ساتھ پائی جاتی ہے۔

پیمان پاک نے یہ بات زور دے کر کہی کہ ہمارے ملک کے خانوادوں کے دسترخوان پر سرخ گوشت کے بجائے مچھلی دیکھی جانی چاہئے۔ انھوں نے کہا کہ اس سلسلے میں ایک باقاعدہ پروگرام بنانے کی ضرورت ہے کہ کس طرح سرخ گوشت یا ریڈ میٹ کی جگہ لوگ مچھلی کو اپنی غذا بنائيں ہم یقینا" یہ کر سکتے ہیں کہ ٹیونا مچھلی کے صاف شدہ قتلوں کو مناسب قیمت پرعام آدمی کے دسترخوان تک پہنچا دیں۔ دوسری مچھلیوں کے برعکس، اس مچھلی کی پرورش اور دیکھ بھال کی بھی کوئی طوالت نہیں ہے۔

انھوں نے کہا کہ اس مچھلی کے سلسلے میں یہ درد سر بھی نہیں ہے کہ مچھلیوں کی خوراک کیسے مہیا کی جائے اور ان کی دیکھ بھال کیسے ہو۔ اسی طرح مختلف قسم کے سرخ گوشت فراہم کرنے والے جانوروں کی پرورش کرنے والے لوگوں کو جانور کی صحت کی دیکھ بھال، فربہی، ان کی  تولید نسل اور پرورش کے مسائل پیش آتے ہیں۔ یوں ایسے اخراجات کو کم سے کم کیا جاسکتا ہے
   
وزٹرز کی تعداد:48
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...