خبر
10/11/2018
آستان قدس رضوی کی لائبریری میں مصر کے ادارہ جات کے سربراہ

 
آستان قدس رضوی کی لائبریری میں مصر کے ادارہ جات کے سربراہ

آستان قدس رضوی کی لائبریری میں مصر کے ادارہ جات کے سربراہ اور خطی نسخوں کی شناخت رکھنے والے اور آستان قدس رضوی کی نشریات کے عہدے داروں کے درمیان ایک میٹنگ منعقد ہوئی۔
آستان نیوز کے خبرنگار کی رپورٹ کے مطابق عبدالعاطی محی الشرقاوی ایک مصری ادارہ کے سربراہ نے مختلف ممالک کا سفر کرکے، دنیا کی بڑی لائبریریوں سے خطی نسخوں کی تصاویر کو جمع کیا اور فہرست نویسی انجام دی  ، اس میٹنگ میں انہوں نے  آستان قدس رضوی کے خطی نسخوں کی شناخت کرنے والے اور نشریات کے عہدے داروں کے حضور آستان قدس رضوی کے اسناد کے مرکز کے شیخ بہائی ہال میں تقریر کی ۔
انہوں نے  اس میٹنگ میں دنیائے اسلام میں خطی نسخوں اور علمی نشرواشاعت  اورمکتوب منابع کو ڈیجیٹال بنانے کے بارے تاکید کی اور کہا: کئی سال پہلے میں نے مختلف ممالک کا سفر  تمام بڑی لائبریریوں کے خطی نسخوں کی تصاویر جمع کرنے کے لیے انجام دیا وہاں سے خطی نسخوں کی تصاویر کے علاوہ مجلات کی تصاویر بھی جمع کیں اور سب کی فہرست نویسی بھی انجام دی۔
اس مصری شخصیت نے اپنے اس سفر کا مقصد پوری دنیا میں  لائبریریوں  اور خطی نسخے رکھنے والوں سے آشنائی اور اپنے ذخیرے کی تکمیل قراردیا اور کہا: میں نے اپنے سفروں میں ان لائبریروں میں خصوصا شخصی لائبریریوں میں کہ جہاں پر خطی نسخوں کی فہرست نویسی نہیں ہوئی تھی اور تصاویر نہیں لی گئي تھیں میں نے بہترین کیفیت کے ساتھ ان تمام لائبریریوں کی تصاویر اور فہرست نویسی انجام دی۔
انہوں نے اپنی فہرست نویسی کی عظیم ترین خصوصیت  ، کتاب کے متن سے باہر تمام یاد داشتوں کو ظاہر کرنا قرار دیا اور کہا: آج تک 7 ہزار صفحات، کتاب کے متن سے باہر کے مطالب جیسے خطی نسخوں کے حاشیے ، پہلے اور آخری صفحوں کی یاد داشت ، مہریں، وقف نامے، مالکوں کی یاد داشتیں  وغیرہ ایک جگہ جمع آوری کی ہیں۔
عبدالعاطی الشرقاوی  نے اس بات  کی طرف اشارہ کرتے ہو‏ئے کہ   مجلات و نشریات کا سب بڑا ذخیرہ جمع کیا ہے ، کہا: یہ ذخیرہ  ایک ویٹ سائٹ کی صورت میں نورمیگز مقالات کی طرح سرچ و سورس کے قابل ہے ، صرف فرق یہ ہے کہ اس ویب سائٹ میں صرف اسی کلمہ کے ذریعہ کہ جس کو تحریر کیا گیا ہے تلاش کیا جاسکتا ہے تمام مقالات مؤلف ، ناشر ، موضوع وغیرہ کے اعتبار سے جدا جدا قابل دستیابی ہیں۔
انہوں نے اس بیان کے ساتھ کہ اس وقت دنیا کے مختلف ممالک کی لائبریریوں کے 500 نسخوں کی تصاویر جیسے مصر ، ترکی، لبنان، شام، اور یورپ و افریقہ وغیرہ کے ممالک کی جمع آوری کی جا چکی ہے ، اس سلسلے میں کہا: اس وقت یہ ذخیرہ دنیائے اسلام میں خطی نسخوں کے ذخیرہ کے طور پر عظیم ترین ذخیرہ ہے ،تکمیل کے مراحل میں ہے ،  اور عنقریب بہت جلد انٹرنیٹ پر ایک ویب سائٹ  دنیا کے تمام محققین کے لیے آغاز کی جائے گی ۔
سید محمد رضا فاضل ہاشمی ؛ آستا ن قدس رضوی کے خطی نسخوں کے ادارے کے سربراہ نے اس پروگرام کے دوران ہمارے خبرنگار سے گفتگو کرتے ہوئے کہا: اس مصری صاحب ذخیرہ  نے دنیا کی مختلف لائبریریوں سے نسخوں کی تصاویرلے کر اور بعض نسخ کو خرید کر ایک عظیم ذخیرہ کی جمع آوری کی ہے  کہ جو عصر حاضر میں آستان قدس رضوی کی مرکزی لائبریری کے ساتھ منابع  کی تصاویر  اور علمی وفنی معاملات میں تعاون کے خواہشمند ہیں، ہم بھی اس موضوع پر تحقیق کر رہے ہیں۔  
وزٹرز کی تعداد:236
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...