خبر
5/16/2018
دنیا کی متعدد مرکزیت کے عنوان سے خصوصی میٹنگ منعقد ہوئي

افق نو انٹرنیشنل کانفرنس کے دیگر پروگرامز  
دنیا کی متعدد مرکزیت کے عنوان سے خصوصی میٹنگ منعقد ہوئي

"دنیا کی متعدد مرکزیت " کے عنوان سے خصوصی میٹنگ افق نو انٹرنیشنل کانفرنس کے دیگر پروگرامز میں شامل تھی کہ جو مشہد کی فردوسی یونیورسٹی کے سیا سی و سماجی سرگرم اسٹو ڈینٹس کی شرکت کے ساتھ منعقد ہوئی۔
افق نو چھٹی انٹرنیشنل کانفرنس کی خصوصی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق افق نو انٹرنیشنل کانفرنس کے تیسرے روز " دنیا کی متعدد مرکزیت " کے عنوان سے ایک میٹنگ مشہد مقدس کی فردوسی یونیورسٹی  کے سیاسی و سماجی اسٹوڈینٹس کے حضور منعقد ہوئی ۔
اس خصوصی میٹنگ میں امریکہ کی وزارت خارجہ  کے امور میں ڈپلومینٹ ڈاکٹر پیتروان بورن اور ایک دوسرے غیر ملکی مہمان نے افق نو چھٹی انٹرنیشنل  کانفرنس میں عالمی مسائل جیسے امریکہ کی  مشرق وسطی کےممالک کی سیاست مداخلت اور اسرائیل کی جنگ بھڑکانے کے موضوع پر تقریر کی۔
امریکہ کی وزارت خارجہ کے امور میں سابق ڈپلومینٹ  نے امریکہ کے  ایران کے ایٹمی سیسٹم سے نکلنے کے بارے میں بھی توضیح دی اور اس کام سے ٹرامپ کے مقصد کو علاقے میں ایران سے جنگ چھیڑنا  قرار دیا  اور اس طرح اس کا اپنا اقتصادی مسئلہ کا حل بھی اس جنگ کے نیتجہ میں ان کے ہاتھوں اسلحہ کا بیچنا قرار ہے۔
"دنیا کی متعدد مرکزیت "کے عنوان سے خصوصی میٹنگ میں فردوسی یونیورسٹی کے اساتذہ و اسٹوڈینٹس نے امریکہ کی وزارت خارجہ کے امور کے ڈپلومینٹ سے سوال کیا اور فلسطین کے متعلق بین الاقوامی اداروں کی بے رخی  اور صیہونیزم حکومت کی حمایت کے متعلق اپنے اپنے نظریات پر اظہار خیال کیا۔


   
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...