خبر
3/11/2018
ایران میں منعقد ہونے والی کلرکٹل کانگریس میں شرکت میرے لئے اعزاز کا باعث ہے

آسٹریا سے کولورکٹل سرجری اسپیشلسٹ نے کہا؛  
ایران میں منعقد ہونے والی کلرکٹل کانگریس میں شرکت میرے لئے اعزاز کا باعث ہے

آسٹریا سے کولورکٹل سرجری اسپیشلسٹ نے تیسری بین الاقوامی کلرکٹل کانگریس اور پہلی پالاراسکوپی کے ذریعے کلرکٹل سرجری کانگریس جو رضوی اسپیشل ہسپتال میں منعقد ہوئی ،شرکت پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے اپنے لئے اعزاز کا باعث جانا۔
آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛ پروفیسر’’بلاٹلکی‘‘ نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ اسے بھی اس کانگریس میں شرکت کی دعوت دی گئی، انہوں نے کہا: کانگریس بہت اچھے اور اعلیٰ معیار کے ساتھ منعقد کی گئی ہے اور لاپاراسکوپی کے ذریعے براہ راست سرجری دیکھ کر بہت اچھا محسوس کیا۔
انہوں نے مزید وضاحت دیتے ہوئے کہا: اس کے علاوہ کولرکٹل امراض کے اسپیشلسٹوں کی موجودگی میں بہت اچھی گفتگو اور بات چیت انجام دی گئی۔
ٹلکی نے لاپاراسکوپی کی اعلیٰ معیاروں کے ساتھ دی جانے والی سرجری کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: ہر شخص کو چاہئے کہ وہ ہردن نئے مطالب اور نیا علم سیکھے۔
قابل توجہ ہے کہ کلرکٹل کینسر سے مراد بڑی آنت اور مقعد میں امراض کا پیدا ہونا ، یہ دو حصے نظام ہضم کے لئے بدن میں اہم ترین حصے ہیں۔
بدن کے نیچلے حصے کے نظام ہضم میں ہر قسم کی تبدیلی جیسے عادت سے ہٹ کر پاخانے کا آنا’پیچس اور یبوست‘‘، پیٹ درد، وزن کا بغیر کسی علت کے کم ہونا، بھوک کا نہ لگنا، ہمیشہ سے تھکاوٹ محسوس کرنا وغٰیرہ کلرکٹل سرطان کی من جملہ علامات ہیں۔
البتہ انتڑیوں کے سرطان میں ابتدائی علامات بعض اوقات ظاہر نہیں ہوتیں اور اس کی تشخیص کے لئے چیک اپ اور ٹیسٹ کی ضرورت ہوتی ہے۔
بڑی عمر کے لوگوں میں کولونوسکوپی کے ذریعے ٹیسٹ انجام دیا جاتا ہے جس میں سرطان کا اندازا لگایا جاتا ہے ، اگر خاندان میں پہلے سے بڑی آنت کا سرطان پایاجاتا ہے تو ہر سال اس ٹیسٹ کو انجام دینے پر تاکید کی جاتی ہے۔
یہ کانگریس رضوی ہاسپٹل اور انجمن کولوپروکٹولوجی کے توسط سے منعقد کی گئی اور اس میں مشہد و شیراز کی میڈیکل یونیورسٹیوں کے تعاون سے خصوصی نشستیں بھی رکھی گئیں اس کے علاوہ براہ راست آپریشن بھی انجام دیا گیا۔ یہ کانگریس تین دن کی مدت تک رضوی اسپیشل ہاسپٹل میں جاری رہی۔


   
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...