خبر
2/7/2019
علاج و معالجہ کے لئے رضوی ہسپتال میں  نئے شعبوں کا افتتاح

 
علاج و معالجہ کے لئے رضوی ہسپتال میں نئے شعبوں کا افتتاح

آستان نیوز؛ رضوی ہسپتال میں  قائم  کئے جانے والے  نئے سیکشنز: سیریس مریضوں کی خصوصی نگہداشت اور دیکھ بھال کا دوسرا سیکشن(ICU2)،دل کے عارضہ میں مبتلا مریضوں کی خصوصی دیکھ بھال کا چوتھا سیکشن(CCU4)،ہیلتھ ٹوریزم کے شعبہ میں مریضوں کی خصوصی دیکھ بھال کا سیکشن(CCU IPD) اور اس کے علاوہ پتھری ختم کرنے کا سیکشن ؛  ان تمام سیکشنز  کا  جمعرات کو  ا ٓستان قدس رضوی کے  متولی حجت الاسلام والمسلمین رئیسی کی موجودگی میں افتتاح کر دیا گیا 
خصوصی نگہداشت اور دیکھ بھال کے ان سیکشنز میں ہر بیڈ  کو   ۱۰    ارب  ریال کی رقم سے تیار کیا گیا ہے      اورمجموعی طور پر گذشتہ چند مہینوں میں ۶۵ بیڈوں کو۷۰۰  ارب  ریال کی لاگت سے  خصوصی دیکھ بھال کے لئے آمادہ کیا گیا ہے ۔
گذشتہ چند سالوں میں علاج و معالجہ کے لئے  آنے   زائرین اور سیاحوں کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے فقط  رواں سال کے پہلے نو مہینوں میں  ۷ ہزار ۳۰۰ سیاحوں نے علاج و معالجہ کے لئے  اس طبی مرکز  کی خدمات حاصل کیں   ۔ ہیلتھ ٹوریزم کے شعبہ میں  علاج کے لئے آنے والے سیّاحوں کی خصوصی دیکھ بھال کے لئے (CCU IPD)کا افتتاح  کیا گیا جو کہ رضوی ہسپتال کے اہم ترین  پروگراموں میں شامل تھا  اور اسی لئے اس سیکشن کے لئے ۲۰ خصوصی بیڈوں کو مدّ نظر رکھا گیا ہے۔
آستان قدس رضوی کے محترم متولی نے ان شعبوں کا افتتاح کرنے کے بعد گیارہ آپریشنز رومز  اور اس کے علاوہ میڈیکل لائبریری کا بھی  معائنہ کیا  
حجت الاسلام والمسلمین سید ابراہیم رئیسی نے اس  موقع پر  گفتگو کرتے ہوئے کہا: آستان قدس رضوی کے سرمایہ کو ادویات کی  پروڈکش  اور کھیتی باڑی کے  لئے ضروری وسائل  فراہم کرنے پر صرف کیا جا رہا ہےکیونکہ یہ چیزیں عوام کی بنیادی ضرورت ہیں، اسی لئے انہیں آستان قدس رضوی کی اقتصادی ترجیحات میں قرار دیا گیا ہے۔
انہوں نے  کہا: آستان قدس رضوی کی اقتصادی و معیشتی تنظیم کے توسط سے ضروری فنانس  فراہم کرنے سے سامان دارو  ہشتم نامی دوا ساز کمپنی نے کینسر کے مریضوں کی پانچ بنیادی ادویات پر ریسرچ شروع کر دی ہے  اور شیڈول کے مطابق آئندہ تین سالوں میں ان ادویات کو تیار کر لیا جائے گا۔
دوا ساز کمپنی سامان دارو  ہشتم   کے منیجنگ ڈائریکٹر جناب مجید طبسی  نے بتایا کہ یہ کمپنی دنیا کی چوتھی بڑی کمپنی ہے جو فاکتور  8 نامی دوا   تیار کرنے والی    ٹیکنالوجی رکھتی ہے،ان کا کہنا تھا: اس کمپنی نے اس  دوا کی ٹیکنالوجی کو جوکہ پہلے فقط تین یورپی  کمپنیوں  کے پاس  ہی تھی  ایران میں بھی حاصل کر لیا ہے اور یہ چیز آستان قدس رضوی کے لئے بہت بڑا اعزاز ہے۔ 
انہوں نے مزید کہا: یہ کمپنی ملک کے ہموفیلیا مریضوں  کو مکمل طور پر دوا فراہم کرنے کے بعد دوسرے ممالک کو برآمد کرنے کا ہدف بھی رکھتی ہے۔ جیسا کہ گذشتہ چند سالوں میں ہمسایہ ممالک سے بھی  اس طرح کی درخواستیں موصول ہوئی ہیں البتہ سب سے پہلے ملکی ضرورت کو پورا کیا جائے گا اور اس کے بعد برآمدات کا سلسلہ شروع کیا جائے گا۔
رضوی ہسپتال کے منیجنگ ڈائریکٹر جناب ڈاکٹر سعیدی نے ہیلتھ ٹورزم کے شعبہ میں سیّاحوں کو علاج و معالجہ کے لئے جذب کرنے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: ۲۰۱۶ میں ہسپتال کی  3/4 فیصد  سالانہ  آمدنی  سیّاحوں کے علاج و معالجہ سے پوری کی گئی تھی۔
انہوں نے بتایا: ۲۰۱۷ میں ۵ ہزار ۲۰۰ غیر ملکی مریضوں نے  اس  اسپتال  میں علاج کرایا  جس سے ۱۴۰  ارب ریال کا سرمایہ حاصل ہونے کے ساتھ ساتھ    اس طبی مرکز کی   چار اعشاریہ  تین   فیصد آمدنی  ان سیّاحوں سے پوری کی گئی اور ۲۰۱۸ میں ان سیّاحوں کی تعداددوگنا ہو کر ۷ہزار ۳۰۰ مریضوں تک پہنچ گئی اور فقط پہلے نو مہینوں میں ۲۰۰  ارب  ریال انہی سیّاحوں کے ذریعہ حاصل ہوئے جوکہ اس ہسپتال کی سالانہ  آمدنی  کا 7/2  فیصد حصہ تھی ،اسی لئے ان تمام چیزوں کو مدّ نظر رکھتے ہوئے مریض سیّاحوں کی دیکھ بھال کے لئے ۲۰ بیڈوں کو مختص کیا گیا ہے جو جدید  آلات سے لیس ہونے کے ساتھ ساتھ دنیا کی مشہور زبانوں پر تسلط رکھنے والے عملہ پر بھی مشمتل ہیں۔
   
وزٹرز کی تعداد:89
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...