خبر
10/6/2019
رضوی اسپتال میں امراض قلب سے  متعلق  تیسری بین الاقوامی  کانفرنس کا    انعقاد

 
رضوی اسپتال میں امراض قلب سے متعلق تیسری بین الاقوامی کانفرنس کا انعقاد

آستان قدس رضوی کے  ہیلتھ  فاؤنڈیشن  کے سربراہ   نے کہا ہے کہ   امراض قلب سے متعلق تیسری  بین الاقومی  کانفرنس میں  امراض قلب کے ماہر سات  سو  ایرانی اور غیر ملکی  ڈاکٹر  اور ماہرین امراض قلب   شرکت کررہےہيں  

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق،  آستان قدس رضوی کے ہیلتھ فاؤنڈیشن کے سربراہ ڈاکٹر محمود محمدزادہ شبستری نے امراض قلب سے متعلق تیسری بین الاقوامی کانفرنس سے قبل  ایک پریس کانفرنس میں  کہا کہ رضوی اسپتال میں ہونے والی اس طرح کی سائنسی اور طبی کانفرنسوں  کے ذریعے ملک کے دیگر علاقوں  اور اسپتالوں نیز کلینک میں میڈیکل سائنس اور علم طب  کو فروغ دینے کے لئے مناسب مواقع  ہوئے ہيں  

انہوں نے اس  کا بات کا ذکرکرتے ہوئے  کہ امراض قلب سے متعلق یہ تیسری  بین الاقوامی  کانفرنس  رضوی اسپتال میں منعقد ہوگي اور اس میں ایران اور پوری دنیا کے  سات سو کارڈيالوجیسٹ  اور امراض قلب کے ماہر ڈاکٹر ز شرکت کریں گے  کہا کہ   اس تین روزہ کانفرنس  کے دوران ایران کی بیس میڈيکل یونیورسٹیاں  چار غیر ملکی  میڈیکل ٹیموں کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کریں گي اور امراض کے قلب کے بارےمیں دوسو تقریریں کی جائيں گی   اسی طرح اس  کانفرنس کے موقع پر      دل کے  بائیس آپریشن اوپن ہارٹ  کے بغیر ہاریون  ایس ٹی  ڈي  فائیو نامی آلے سے انجام دئے جائيں گے   

ڈاکٹر شبستری نے کہا کہ اس  کانفرنس  میں دنیا بھر  کے  19 ممالک کے کارڈیالوجیسٹ شرکت کررہے ہیں کہ جو   امراض  قلب کے علاج میں  غیر معمولی مہارت رکھتے ہيں  ان میں انگلینڈ، امریکہ، اور اٹلی کے ڈاکٹر ز بھی شامل ہیں۔   ان کا کہنا  تھا  کہ اس سلسلے میں آستان قدس رضوی کے متولی اور دیگر عہدیداروں کی رہنمائیاں  ہمارے لئے بہت ہی راہ گشا اور مفید رہی ہیں  اور ہمارے لئے سب سے بڑا اعزاز  و افتحار یہ ہے کہ  عالمی سطح پر  ہماری یہ خدمات امام رضا علیہ السلام کے نام مبارک سے انجام پارہی ہیں  ۔ آستان قدس رضو ی کے ہیلتھ فاؤنڈیشن  کے سربراہ نے کہا کہ ہمیں اس بات کا اعتراف کرنا چاہئے  کہ عالمی سطح پر ہونے والی بین الاقوامی کانفرنسوں  کے ا نعقاد میں ایران کا کردار بھی بہت ہی اہم ہے۔  انہوں نے کہا کہ دنیا کے دیگر ملکوں میں امراض قلب سے متعلق جو عالمی کانفرنسیں اور سیمینار ہوتے ہیں ان میں سے   ہر ایک  میں ایران سے کم سے کم چھے  ڈاکٹر شریک ہوتےہیں  ۔  انہوں نے کہا کہ مشہد کے رضوی اسپتال میں جو میڈيکل کانفرنسیں ہوئی ہيں ان کا ایک  اہم ترین نتیجہ یہ نکلاہے کہ  اب  بیہوش کئے بغیر ہی مریضوں کے دل کا آپریشن انجام دیا جاتا ہے   ۔ ڈاکٹر شبستری کا کہنا  تھا کہ امراض قلب کے علاج و معالجے میں آج ایران کا شمار  دنیا کے چند صف اول کے ملکوں میں ہوتا ہے  اور انتہائی جدید  روش کے ساتھ دل کے آپریشن  اب ایران کے مختلف شہروں منجملہ مشہد میں انجام پانے لگے ہيں  
 

   
وزٹرز کی تعداد:15
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...