خبر
2/7/2019
آستان قدس رضوی  کے  پانچ   زراعتی   منصوبوں کا  افتتاح

 
آستان قدس رضوی کے پانچ زراعتی منصوبوں کا افتتاح

آستان نیوز: اسلامی انقلاب کی  کا  میابی کی  چالیسویں سالگرہ  کی مناسبت سے  جمعرا ت کی صبح  آستان قدس رضوی سے وابستہ  پانچ زراعتی منصوبوں کا افتتاح ہوا۔   افتتاحی تقریب میں  حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے حرم  کے متولی حجت الاسلا سید ابراہیم رئیسی بھی موجود تھے ۔
( مزرعہ نمونہ)آئیڈیل زراعت  کی کاشتکاری و صنعت کے ادارے  کی 15 /ایکڑزمین کو پانی دینے کے لیے ایک پروجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھا جانا ، 13/ ایکڑ   گھنے باغ میں  جدید ترین  آبپاشی سسٹم  کا نصب ہونا،گوشت کے ٹکڑے بنانے اور پیکنگ  کے لیے ہال کا افتتاح ، شہر چناران میں فوارے کے ذریعہ  سینچائی اور آبپاشی سسٹم کا 40 / ایکڑ زمین میں افتتاح اور شہر تربت حیدریہ کے پستے کے باغات  میں پچکاری کے ذریعہ 107 / ایکڑ زمین  کی سینچائی اور آبپاشی سسٹم کا افتتاح   جمعرات کو ہوئے  پروگرام اور تقریبات کا حصہ  تھا
مزرعہ نمونہ  کاشتکاری و صنعت  کے ادارے کے سربراہ علی اورعی زارع  نے اس  بات کا ذکرکرتے ہوئے  کہ  مزرعہ نمونہ  یا آئيڈیل  زراعت    و صنعت نامی  محکمے   کی  15/ ایکڑ زمین میں آبپاشی سسٹم کا سنگ بنیاد رکھا گیا ہے  کہا: اس آبپاشی سسٹم کے نصب ہونے میں ہر ایک ایکڑ  زمین کے  خرچ  کا  تخمینہ 35ملین تومان لگایا گیا ہے۔
اورعی زارع نےاس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ اس  آبپاشی سسٹم کے نصب ہونے سے 75 فیصد پانی کی بچت  ہو گی   کہا: اس سسٹم کے نصب ہونے کا ایک فائدہ یہ ہے کہ پانی کے بخار اور بھاپ ہونے کا سلسلہ بھی ختم ہوگیا ہے ۔
انہوں نے مزرعہ نمونہ کی کاشتکاری و صنعت کے ادارے کی زمینوں میں آبپاشی کے جدید سسٹم نصب ہونے کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: اب تک مزرعہ نمونہ کی کاشتکاری و صنعت نامی محکمے    کی 4 ہزارایکڑ  زرعی  زمینوں اور باغات میں آبپاشی  کا  یہ جدید سسٹم نصب ہوچکا ہے۔
13 / ایکڑ باغ میں اسمارٹ سسٹم  کا نصب ہونا
آستان قدس رضوی کے مزرعہ نمونہ کاشتکاری و صنعت  کے ادارے کے سربراہ نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ   13/ ایکڑ  گھنے باغ میں اسمارٹ سسٹم اور جدید ترین آبپاشی سسٹم نصب ہوچکا ہے ، کہا:کاشتکاری و صنعت  کےا دارے  کے  آڑو اور شلیل  پھلوں کے 13 / ایکڑگھنے باغات میں آبپاشی   کا سسٹم اسمارٹ ہے کہ جو سینچائی   اور آبپاشی  کے میدان میں جدید ترین سسٹم  شمار ہوتا ہے ۔
اورعی زارع نے  مزرعہ نمونہ کے گھنے باغات میں 90 لاکھ نرسری درختوں کی طرف اشارہ کیا اور کہا: کاشتکاری و صنعت  کے ادارے کے پاس اس وقت 20 / ایکڑ  گھنے باغ اور 24 / ایکڑ آدھے گھنے باغات ہیں کہ ان تمام 44 / ایکڑ باغات میں پچکاری  کے ذریعہ  آبپاشی کی جاتی ہے ۔
انہوں نے اس بیان کے ساتھ کہ   مزرعہ نمونہ کاشتکاری و صنعت  کےادارہ  کی زمینوں میں سالانہ 60 ہزار ٹن پھلوں کی پیداوار ہوتی ہے، کہا:  کاشتکاری و صنعت  کا  ادارہ  ملک کے مشرقی علاقے میں ٹماٹر  اور مکئی پیداکرنے والاسب سے بڑا   ادارہ  شمار کیا جاتا ہے
گوشت کے ٹکڑے کرنے اور پیکٹ بنانے کا ہال
اسی طرح گوشت کے ٹکڑے کرنے اور پیکٹ بنانے کے لیے آستان قدس رضوی کے مزرعہ نمونہ کاشتکاری و صنعت کے ادارے  کی تقریبا 650 میٹر مربع زمین میں ایک ہال کا افتتاح ہوا ، اس ہال کے افتتاح ہونے سے حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے مہمان سراکے لیے ٹکڑے شدہ ، بوٹیاں بنی ہوئی   اور حفظان صحت کے سبھی   اصول کی رعایت کےساتھ یہ  گوشت   اس مہمان سراکی  ضرورت کو پورا کرے گا۔
مزرعہ نمونہ کاشتکاری و صنعت  کے ادارے  کے سربراہ  علی اورعی زارع نے مذکورہ   ادارے کے مذبح خانے میں روزانہ 300 سے 500 جانور ذبح ہونے کی طرف اشارہ کیا اور کہا: عام طور پر   روزانہ چار سے ساڑھے چار ٹن گوشت ٹکڑے اور بوٹیوں کی صورت میں پیک کرکے  اس ہال سے حضرت امام علی رضا علیہ السلام کےمہمان سرا میں  ارسال کئے جاتے ہيں ۔ انہوں نے کہا کہ  اس پروجیکٹ کی تعمیر میں تقربیا تین ارب تومان خرچ ہوئے ہیں  ۔
40 / ایکڑ زمین میں فوارے کی صورت میں آبپاشی سسٹم کا پروجیکٹ
  شہر چناران میں آستان قدس رضوی  کی  40 / ایکڑ زمین  کی سینچائي اور آبپاشی کے  لئے  سسٹم کا قیام  جوکہ  فوارے کی صورت میں ہے  شہرچناران  کے ادارہ اوقاف کے تعاون سے انجام پایا ۔
انہوں نے کہا کہ  40 / ایکڑ زمین میں فوارے کی صورت میں  آبپاشی  کے سسٹم کے قیام پر  85 / ارب تومان  خرچ ہوئے ۔    ان کا کہنا تھا کہ: یہ تمام رقم ادارے  کے  اپنے ذرائع سے حاصل کی گئي ہے ۔
چناران کے ادارہ اوقاف  و کاشتکاری کے سربراہ نے کہا: اس سلسلے میں جو اقدامات انجام پائے ہیں  ان سے ہم نے ہر ایک ایکڑ زمین سے 92 ٹن شکر کے چغندر پیداکیے کہ جو مجموعی طور پر  2500 ٹن ہوتے ہیں اور اس طرح  شہرچناران چغندر کی پیداوار میں پہلا مقام  حاصل کرنے والا خطہ بن گیا ہے اس کے علاوہ  اس نے ، 380 ملین  تومان کا فائدہ  بھی حاصل کیا ہے ۔
107 / ایکڑ پستوں کے باغات میں پچکاری کے ذریعہ آبپاشی سسٹم کا  قیام
شہر تربت حیدریہ میں بھی  107 / ایکڑ  پستوں کے باغات میں پچکاری کی صورت میں آبپاشی  سسٹم نصب کیا گیا ہے ۔
شہر تربت حیدریہ کی کاشتکاری و صنعت کے  محکمے کے سربراہ قناد طوسی نے کہا: آستان قدس رضوی، ملک میں پانی کی قلت و بحران اور قومی ذخائر کی حفاظت کی خاطر اپنی کاشتکاری و جنگلات کی حفاظت  میں ہمیشہ آبپاشی    کے ترقی یافتہ سسٹم کی تلاش میں رہا ہے اور اس سلسلے میں بہت اچھی سرمایہ کاری کی  ہے ۔
انہوں نے کہا کہ  اس پروجیکٹ کو عملی جامہ پہنانے میں 9/ ارب اور 210 ملین  ریال خرچ  ہوئے ہیں     
وزٹرز کی تعداد:51
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...