خبر
5/13/2019
  تبلیغ دین  کا بہترین طریقہ   اپنے  کردار و  رفتار  میں تبدیلی لانا ہے ، نومسلم  جرمن خاتون کا بیا ن

 
تبلیغ دین کا بہترین طریقہ اپنے کردار و رفتار میں تبدیلی لانا ہے ، نومسلم جرمن خاتون کا بیا ن

جرمنی   سے تعلق رکھنے والی نومسلم  خاتون محترمہ سونیافرای   کا    کہنا  ہے کہ   دین کی تبلیغ کا بہترین طریقہ  اپنے کردار و   رفتار  میں تبدیلی لانا ہے۔

آستان قدس رضوی کے  ویجویل میڈیا سینٹر  کے ادارہ تعلقات عامہ کی رپورٹ کے   مطابق  جرمنی سے تعلق رکھنے والی نومسلم خاتون  محترمہ  سونیا فرای  نے جو پہلے عیسائی تھیں اور اب مشرف بہ اسلام ہوچکی ہیں ،    امام رضا(ع) سیٹلائٹ  چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ دین مبین اسلام کی تبلیغ کی بہترین روش یہ ہے کہ ہم  خود  اپنے کردار و  رفتار میں تبدیلی لائیں اور اس مقصد کے حصول کے لئے خداوند متعال کے احکامات اور  اہلبیت اطہار علیہم السلام کی سیرت  کی ترویج اور اس پر ہمیں عمل کرنا ہو گا۔ 

اس موضوع کی اہمیت کو مدّ نظر رکھتے ہوئے انہوں نے  کہا کہ نہ فقط اسلامی جمہوریہ ایران بلکہ مسلمانوں کو چاہئے کہ پوری دنیا میں  حقیقی اسلام کو روشناس کرانے کے لئے کو شش  کریں۔ 

محترمہ سونیا فرای نے  خود کو    دین   اسلام قبول کرنے  کی راہ  میں پیش آنے والی  رکاوٹوں  کا ذکرکرتے  ہوئے کہا  کہ میرے  اسلام لانے میں سب سے  پہلی رکاوٹ میری ماں تھیں  جو خود بھی  عیسائی  تھیں اور جب انہوں نے میرے ہاتھوں میں قرآن کریم کو دیکھا تو کافی پریشان ہوئیں اور کہنے لگيں کہ   انجیل  کو چھوڑ کے قرآن کا دامن کبھی بھی مت  تھامنا ،  اس  پر  میں نے ان سے  کہا کہ فقط معلومات حاصل کررہی ہوں  اور کوئی غلط کام  نہيں کررہی ہوں ۔ 

محترمہ سونیا فرای مزید کہتی  ہيں کہ  اس کے علاوہ میرے   ایک استاد نے مجھے نصیحت کی کہ ہرگز اسلام کے نزدیک مت جانا وہ  نہایت خطرناک دین ہے  اس دین میں عورتوں کے حقوق بہت کم ہیں ۔ان کے علاوہ میری  دوستوں نے   بھی مجھے  اسلام کے قریب  آنے سے منع کیا   اور میں ان سب کے جواب میں یہی کہتی کہ فقط حقیقت جاننا چاہتی ہوں اور ہر وہ چیز جو عقل کے مطابق  ہوگی   اسے قبول کروں گی۔

محترمہ فرای نے جو    دو برسوں  سے ایران میں رہائش پذیر ہیں کہا کہ  حضرت امام رضا علیہ السلام کی نورانی بارگاہ کی وجہ سے مشہد مقدس کا  ماحول انتہائی روحانی اور معنوی ہے     لیکن ان سب چیزوں کے باوجود ایسا لگتا ہے کہ    کچھ  افراد ایسے بھی  ہیں جو مذہب کے بارے میں جاننے  میں دلچسپی نہيں رکھتے  بنابریں   ایسے لوگوں کی  سوچ او رنظریات  کی شناسائی کرکے   انہیں  صحیح معنوں میں دین کی طرف راغب  کرنے کی کوشش ہونی چاہئے  
محترمہ سونیا فرای نے جدید ذرائع ابلاغ   کے وسائل سے استفادے کی ضرورت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امیدکرتی ہوں کہ امام رضا(ع) سیٹلائٹ  چینل حقیقی اسلام،ایران اور حقیقی شیعت کا چہرہ اور تصویر دنیا کے سامنے پیش کرنے میں کامیاب ہوگا 
   
وزٹرز کی تعداد:74
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...