خبر
9/10/2019
حرم مطہر رضوی میں  شام غریباں

 
حرم مطہر رضوی میں شام غریباں

حضرت امام علی رضا علیہ السلام کے حرم مطہر  میں   سید الشہدا حضرت امام حسین علیہ السلام کے غم میں مجلس شام غریباں برپا کی  گئي جس میں  خدام ، زائرین    اور مجاوروں کی بہت بڑی تعداد نے شرکت    کی

شام غریباں کی عزاداری کے پروگرام میں بارگاہ رضوی کے خدام  منظم طریقے سے ایک  قافلے کی شکل میں   ہاتھوں میں شمعیں لئے اورمرثیہ  و نوحہ پڑھتے ہوئے شیرازی روڈ پر واقع   شہداء چوک سے حرم مطہر رضوی کی طرف پیدل چل کر آئے۔

حضرت ابا عبد اللہ الحسین علیہ السلام کی  یاد میں  مجلس شام غریباں کے یہ  پروگرام  نماز مغربین کے فوراً بعد حرم مطہر رضوی کے صحن انقلاب اسلامی میں شروع ہو گئے اور   کافی دیرتک   نوحہ خوانی اور مرثیہ خوانی ہوتی رہی اور آخرمیں عزاداروں نے لبیک یا حسین کے نعرے لگائے ۔

آذربائیجان سے  آنے والے آذری زبان زائرین نے حرم رضوی کے دارالرحمہ ہال میں آذری زبان میں مجلس  شام غریباں  برپا کی۔

دس محرم الحرام کی صبح حرم مطہر رضوی میں عربی اور فارسی زبان میں مقتل  یا مصائب  امام حسین علیہ السلام خصوصی انداز میں پڑھے گئے  

اس کے علاوہ دسویں محرم یعنی عاشور کے دن اسلامی جمہوریہ ایران کے مختلف شہروں سے سینکڑوں کی تعداد میں ماتمی دستوں اور انجمنوں نے حرم مطہر رضوی میں حاضر ہو کر نوحہ و ماتم کیا  ۔

قبل ازیں شب عاشور   سید الشہداء حضرت امام حسین علیہ السلام کی پیروی کرتے ہوئے حرم رضوی کے امام خمینیؒ ہال میں انس با قرآن کے عنوان سے ایک عظیم اور معنوی جلسہ قرآن کا انعقاد کیا گیا ۔

واضح رہے کہ  حرم رضوی میں محرم الحرام کے پہلے عشرہ میں منعقد ہونے والے تمام پروگرام چالیس ہزار اعزازی خادموں کی موجودگی میں مکمل نظم و ضبط  اورانتہائی پرسکون ماحول میں   منعقد کئے گئے۔  
وزٹرز کی تعداد:13
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...