خبر
10/9/2019
علمی و سائنسی  پیشرفت  آستان قدس  رضوکی  اہم  اسٹریٹیجی  ہے ، متولی آستان قدس

 
علمی و سائنسی پیشرفت آستان قدس رضوکی اہم اسٹریٹیجی ہے ، متولی آستان قدس

حرم مطہر رضوی کے  متولی حجت الاسلام شیخ احمد مروی  نے کہا ہے کہ  علمی اور سائنسی  میدانوں میں ترقی و  پیشرفت آستان قدس رضوی کی اہم ترین اسٹریٹیجی ہے   

آستان نیوز کی رپورٹ کے مطابق؛  امراض قلب سے متعلق تیسری   رضوی  بین الاقوامی  کانفرنس  مشہد مقدس کے رضوی اسپتال میں شروع ہوئی جس میں  آٹھارہ ممالک کے سات سو ماہرین امراض قلب   اور کارڈیالوجیسٹ شریک ہیں۔      دل کے   عارضے  اور امراض قلب سے متعلق تیسری رضوی بین  الاقوامی کانفرنس  کی  افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آستان قدس رضوی اور امام رضا علیہ السلام کے حرم  کے متولی حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی نے  اس بین الاقوامی کانفرنس کو تازہ ترین سائنسی اور علمی ایجادات اور نتائج  کے    تبادلہ کا بہترین موقع قراردیتے  ہوئے دین مبین اسلام میں علم کی اہمیت کی طرف اشارہ کیا اور کہا کہ دین اسلام میں علم حاصل کرنے کے سلسلے میں قرآن و روایات میں بہت زیادہ تاکید کی گئی ہے اور اسلام نے حصول علم کو مقدس فریضہ قراردیا ہے  

انہوں نے علم  وسائنس کی ترقی و پیشرفت کو  آستان قدس رضوی کی بنیادی پالیسی اور اسٹریٹیجی قراردیتے ہوئے   کہا کہ آستان قدس رضوی کے حضرت امام علی رضا علیہ السلام سے منسوب ہونے کے پیش نظر کہ جن کا ایک لقب عالم آل محمد(ص) ہے اور اس کے علاوہ رہبر انقلاب حضرت آیت اللہ العظمیٰ خامنہ ای کی ہدایات کی روشنی  میں  آستان قدس رضوی کی اہم ترین اور بنیادی  پالیسی علمی  اور سائنسی میدان میں  ترقی و پیشرفت کی پالیسی و اسٹریٹیجی ہے اور اس اصول پر میں نے ہمیشہ توجہ دی ہے اور دیتا   رہوں گا  

حجت الاسلام والمسلمین مروی نے آیات و روایات کی روشنی میں انسان کی معنوی و روحانی تعالی و ترقی میں دل  اور  قلب کے اثرات کو  بیان کرتے ہوئے کہا کہ دل  کی سلامتی اور اس کا صحتمند رہنا   جو امراض قلب اور دل کے عارضے  کے ماہر ڈاکٹروں اور اس میدان کے اساتذہ کی علمی و سائنسی سرگرمیوں کا مرہون منت ہے  دل اور قلب  کے استحکام اور انسان   کے اطمینان قلبی تک پہنچنے کار استہ ہموار کرتا ہے  

آستان قدس رضوی  کے متولی نے اس سلسلے میں حضرت امام محمد باقرعلیہ السلام سے ایک روایت نقل کی جس میں امام علیہ السلام نے فرمایا: ’’ صحت و سلامتی سے متعلق  علم کی تلاش اور حصول سے بالاتر کوئی علم نہیں ہے‘انہوں نے  کہا  کہ بدن سالم ہو گا تو ذہن بھی سالم ہو گا اور جسم کی سلامتی روحانیت و معنویت کا مقدمہ ہے اس لئے آستان قدس رضوی  جس طرح  انسانوں کو معنویت اور روحانیت کی گہرائیوں سے آشنا کرنے کے لئے منصوبہ بندی کرتا ہے اسی طرح  علاقائی ہیلتھ اور جسمانی سلامتی کے لئے بھی کوشش کرتا ہے   

حجت الاسلام والمسلمین احمد مروی نے   کہا کہ مشہد مقدس دینی معنویت و روحانیت کا مرکز ہے اس لئے اس شہر کو صحت و سلامتی، علاج و معالجہ اورطبی  اخلاقیات  و روایات  کا بھی مرکز ہونا چاہئے ۔ ا نہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں آستان قدس رضوی کی کوشش ہے کہ یونیورسٹیوں  اور طبی و تحقیقاتی مراکز کی تمام تر توانائیوں سے استفادہ کرتے ہوئے عالمی سطح پر  حفظان صحت  اور خطے میں علاج و معالجہ کی خدمات میں ممتاز و مؤثر کردار ادا کرے۔ 


   
وزٹرز کی تعداد:39
 
آپ کی رائے

نظر شما
نام
پست الكترونيک
وب سایت
نظر
...